Petition Closed

To retain Muslim Personal Law in India ھندوستان میں مسلم پرسنل لاء کے تحفظ کے لیے

This petition had 94,347 supporters


We the undersigned;  Muslim Men and Women do hereby declare that we are fully satisfied with all the rulings of Islamic Shariah, particularly, Nikah, Inheritance, Divorce, Khula,  Faskh (Dissolution of Marriage) and Waqf. We deny that these need any reform or there is any scope there in. 

We fully support All India Muslim Personal Law Board and firmly stand with it in its endeavors to safeguard Shariah Law. We wish to make it absolutely clear that Shariah Law does not need any change; rather what really required is eradication of social evils, cultivation of good habits and overcoming weaknesses and honestly following the Shariah Law. 

ہم دستخط کنندگان مرد و خواتین ہیں ہر ایک پر واضح کرنا چاہتے ہین کہ ہم اسلامی شریعت کے تمام احکام خاص طور سے نکاح، وراثت، طلاق، خلع، فسخ نکاح اور وقف کے دینی احکام پر پوری طرح مطمئن ہیں، اور ان میں کسی طرح کی کوئی تبدیلی کی ضرورت یا گنجائش سے انکار کرتے ہیں۔

ہم قانون شریعت کی حفاظت میں آل اندیا مسلم پرسنل لاء بورڈ کے ساتھ ہیں۔ ہم زور دے کر کہتے ہیں کہ قانون شریعت میں تبدیلی کی ضرورت نہیں ہے، بلکہ ضرورت اپنے معاشرتی خرابیوں کو دور کرنے، بھری عادتوں کو سدھارنے اور ایمانداری کے ساتھ شریعت پر عمل کرنے کی ہے۔



Today: Mufti Taufeeq Mansoor is counting on you

Mufti Taufeeq Mansoor Mazahiri needs your help with “All India Muslim Personal Law Board : To retain Muslim Personal Law in India ھندوستان میں مسلم پرسنل لاء کے تحفظ کے لیے”. Join Mufti Taufeeq Mansoor and 94,346 supporters today.