Demanding to end the Witchcraft culture in Pakistan

Demanding to end the Witchcraft culture in Pakistan

0 have signed. Let’s get to 2,500!
At 2,500 signatures, this petition is more likely to get picked up by local news!
Amjad Khan started this petition to Imran Khan (Prime Minister of Pakistan) and

(اردو میں نیچھے پڑھئے)

People in Pakistan are facing a big problem in the shape of Black Magic and Taweez (Talisman) being done on them by other people (most probably relatives who have access to your home and rooms). People end up in difficult positions in terms of Health, Wealth, Depression, Anxiety for years with no proper cure. Infact they lose everything and become Broke.
This is very common in Pakistan and in some cases leads to death of the affected person. If you do a comparison, its worst than an  attempted murder. People have lost businesses, gotten sick severely and have been going back and forth to Psychiatrists. Now majority of people in Pakistan turn to 'Aamils' (Sorcerers) most of which claim to be Muftis. They charge money and people end up wearing more Taweez for protection. People wearing Taweez in Pakistan is very common and you will find every 3rd person wearing one in the neck or arms. (That's almost 70 Million people)
Now these Aamils, what they do is do their spells using the ancient Numerology knowledge on papers and this actually would help cure the affectee temporary over time but these Aamils plant seeds into houses they visit and do spells on the other family members so they all keep going to him again and again for years. It's a way of making money playing with people's lives. 
So far that I have experienced the only solution is Ruqqiyah Shariah and visit an Aalim (Scholar) who doesn't charge anything.

My request to the Government is to introduce a new authority under Awqaf all over Pakistan (even in small towns where these cases are in abundance). Now the Government can hire good Scholars who have studied and graduated from International Islamic Universities in Saudi, Egypt etc. They would be expert in cleansing this plague from people that are affected. They should be free and recognized hence the people will go to them instead of going to these Sorcerers.

Now on the other hand, if you find out who did this Taweez on your family you cannot prove anything against them in Police or Courts, in that case Government needs to find out all these Magicians and Sorcerers who are the main cause of all this creation and penalize them with Death. In Saudi Arabia they have a similar authority under the Religious Police that catch these people and punish them to death, they take this very seriously. Same goes with Dubai, UAE, they under Awqaf too take these things very seriously and use proper Scholars to destroy these stuff using Quran verses. They should be charged with severe punishment, worst than that given to an attempted murder criminal.

One of the perks of it is people from neighbouring countries could end up visiting Pakistan for these Government-hired Scholars to cure themselves. Note that these things happen alot in the entire sub-continent and also in Middle East. This could boast our Religious Tourism hence benefitting the country's economy.

Please help me raise this Petition to the Government of Pakistan. Whether you have experienced it or not, I hope you Sign it for others sake and share it further to get more Signatures. 


  • پاکستان میں جادوٹونا کے خلاف حکومت سے کارروائی کا مطالبہ
  • پاکستان میں لوگوں کو کالا جادو اور تعویزوں کی شکل میں ایک بہت بڑی لعنت کا سامنا کرنا پڑ رہا ہے۔ صحت ، دولت ، افسردگی ، پریشانی کے لحاظ سے لوگ سالوں سے مثبت علاج کے بغیر ختم ہوجاتے ہیں۔ حقیقت میں وہ سب کچھ کھو بیٹھتے ہیں اور ٹوٹ جاتے ہیں۔
    یہ پاکستان میں بہت عام ہے اور کچھ معاملات میں متاثرہ شخص کی موت بھی ہو جاتی ہے۔ اگر آپ موازنہ کریں تو ، یہ قتل کے جرم سے بھی بدتر ہے۔ لوگ کاروبار کھو چکے ہیں ، شدید بیمار ہو چکے ہیں اور ماہر نفسیات کے چکر کاٹ رہے ہیں۔
    پاکستان میں زیادہ تر لوگ 'عامل' (جادوگر) کی طرف رجوع کر دیتے ہیں جن میں سے بیشتر مفتی ہونے کا دعوی کرتے ہیں اور وہ اس لیے ادھر جاتے ھیں کیونکہ حکومت کی طرف سے کوئ متبادل قانون سازی نہیں۔
    سو یہ عامل عرف تعویز بابا آٹومیٹک حل کے شکل میں آپ کیلیے ایک فرشتہ بھی، ڈاکٹر بھی اور مصیحہ بھی ہو جاتا ہے۔ یہ آپ سے پیسے لیتے ہیں اور لوگوں کو مزید تعویزوں میں باندھ دیتے ھیں۔ پاکستان میں لوگوں کاتعویز پہننا حزب معمول بن گیا ہے اور آپ کو ہر تیسرا شخص گردن یا بازو میں ایک پہنے ہوئے ملے گا۔ (یہ تقریبا 7 کروڑ افراد بنتے ہیں)
    اب یہ عامل ، جو وہ کرتے ہیں وہ کاغذات پر قدیم علمیات کے علم کو استعمال کرتے ہوئے اپنے منتر انجام دیتے ہیں اور اس سے متاثرہ افراد کو وقتی طور پر تو آرام مل جاتا ہے لیکن یہ عامل آپکے گھروں میں بیج لگاتے ہیں اور گھر کے دوسرے افراد پر جادو کر دیتے ہیں تاکہ ان کا آنا جانا لگا رہے۔ یہ لوگوں کی زندگیوں کے ساتھ کھیل کر پیسہ کمانے کا ایک کاروبار ہے۔
    ابھی تک میں نے اس کا واحد حل رقیعہ شرعیہ میں دیکھا ہے اور ایک ایسے عالم (اسکالر) سے ہو جو پیسوں میں دلچسپی نہیں رکھتا ہو۔ مگر یہ بھی اتنا آسان نہیں
  • حکومت سے میری گزارش ہے کہ پورے پاکستان میں اوقاف کے تحت ایک نئی اتھارٹی متعارف کروائیں (خاص کر کہ چھوٹے گاؤں میں جہاں یہ معاملات وافر مقدار میں ہیں)۔ حکومت ایسے اچھے اسکالروں (عالموں) کی خدمات حاصل کرسکتی ہے جنہوں نے سعودی ، مصر وغیرہ میں بین الاقوامی اسلامی یونیورسٹیوں سے تعلیم حاصل کی ہو اور اس سے فارغ التحصیل ہوں۔انکو بھرتی کیا جائے اور وہ متاثرہ لوگوں سے یہ طاعون صاف کرنے میں ماہر ہوں۔ وہ پیسے بھی نہیں لیں گے لہذا عوام ان جادوگروں/عاملوں کے پاس جانے کی بجائے ان کے پاس آئیں گے۔
  • اب ، دوسری طرف ، اگر آپ کو پتہ چلتا ہے کہ آپ کے گھر والوں پر یہ تعویز کس نے کی ہے تو آپ پولیس یا عدالتوں میں ان کے خلاف کچھ ثابت بھی نہیں کرسکتے ہیں ، اس صورت میں حکومت کو ان تمام جادوگروں اور پیروں کو پکڑنا چاہیے جو اس لعنت کی اصل وجہ بنے ہیں۔ اور ان کو موت کی سزا دی جائے۔ سعودی عرب میں مذہبی پولیس کے تحت ایک ادارہ ہے جو اس طرح کا اختیار رکھتا ہے، جو ایسے لوگوں کو پکڑتا ہے اور انہیں موت کی سزا دیتا ہے ، وہ اس معاملے کو بہت سنجیدگی سے لیتے ہیں۔ ادھر دبئی ، متحدہ عرب امارات میں بھی اوقاف کے تحت ان چیزوں کو بہت سختی سے لیتے ہیں اور قرآن مجید کی مدد سے ان چیزوں کو ختم کرنے کے لئے مناسب اسکالرز کا استعمال کرتے ہیں۔
  • ان پر سخت سزا کا الزام عائد کیا جانا چاہئے ، جو قتل کے مجرم کو دیا جاتا ہے۔
    مستقبل میں اس میں سے حکومت کو بھی ایک فائدہ یہ ہے کہ آس پاس کے ممالک کے لوگ اس حکومت کی خدمات حاصل کرنے والے ان اسکالرز سے علاج کرانے پاکستان آئیں گے (بشرط یہ کہ حکومت اعلٰی اور قابل علماء کو نوکری پر رکھیں)۔ یاد رہے کہ یہ نہوست پورے برصغیر اور مشرق وسطی میں بھی پائی جاتی ہے، اس سے ہماری مذہبی سیاحت بڑھے گی لہذا ملکی معیشت کو فائدہ پہنچے گا۔

  • براہ کرم حکومت پاکستان کو یہ پٹیشن پہنچانے میں میری مدد کریں۔ چاہے آپ پہ یہ عذاب گزرا ہو یا نہ ہو ، میں امید رکھتا ہوں کہ آپ اپنے نہیں تو دوسروں کی خاطر اس پر دستخط کریں گے اور مزید دستخطوں کیلیے اسے آگے شئیر کریں گے۔
  • تحریر: امجد خان اعوانزی
0 have signed. Let’s get to 2,500!
At 2,500 signatures, this petition is more likely to get picked up by local news!