پاکستانی سیاستدانو! ریاستی منصب کی تضحیک پر کشمیری قوم سے معافی مانگو

0 have signed. Let’s get to 200!


بین الاقوامی تنازعات میں کشمیر کا مقدمہ سب سے سیدھا ہے اور اسکی تاریخ جھٹلائی نہیں جا سکتی۔ 
پانچ جنوری 1949 کو اقوام متحدہ میں متفقہ طور پر منظور ہونے والی قرارداد نمبر ایس /1196 ریاست کشمیر کےاطراف کے عوام کو اس بات کا حق دیتی ہےوہ الحاق پاکستان ، الحاق ہندوستان یا خودمختار ریاست کشمیر کا آپشن استعمال کر تے ہوئے اپنے مستقبل کا فیصلہ خود کر یں گئے۔ 
حالیہ دنوں میں آذاد کشمیر کے وزیراعظم کی طرف سے دئے گئے ایک متنازعہ بیان کو لیکر ، پاکستانی سیاستدانوں بشمول ، عمران خان، شیخ رشید، فیاض الحسن چوہان و دیگر اور اینکر پرسن ڈاکٹر عامر لیاقت اوریا مقبول جان و دیگر کی طرف سے ریاست کے عوام اور ریاستی منصب کیلئے استعمال کی گئی بدزبانی پر کشمیری قوم شدید احتجاج کرتے ہوئے وقت کے نا خداؤں کو یہ یاد دلانا چاہتی ہے کہ کشمیری اپنےفیصلے کے خود مالک ہیں اور انھیں اپنا ذاتی ملازم اور ملک پاکستان کا غلام سمجھنے کی غلطی ہر گز نہ کی جائے ۔

 کشمیری عوام ان تمام افراد  سے مطالبہ کرتے ہیں کہ ریاستی عوام اور ریاستی منصب کی تضحیک کرنے پر فوراً کشمیری قوم سے معافی مانگی  جائے۔



Today: Faisal is counting on you

Faisal Chughtai needs your help with “پاکستانی سیاستدانو! ریاستی منصب کی تضحیک پر کشمیری قوم سے معافی مانگو”. Join Faisal and 103 supporters today.