Petition Closed

پاکستان میں اتحاد بین المومنین اورمشترکہ القدس ریلی کا انعقاد

This petition had 104 supporters


بسم اللہ الرحمن الرحیم

دین اسلام کاایک نهایت هی اهم مقصد مسلمانوں کے درمیان اتحاد ویکجهتی قائم کرنا ہے. قرآن وسنت کے رو سے جیسا اتحاد ووحدت قائم کرنا واجب ہے، ویسا هی اختلاف وتفرقه سے بچنا ضروری امر ہے. ائمه اطهارعلیهم السلام اوردیگر معتبراسلامی شخصیات کی زندگی بھی امت مسلمه کو اختلافات سے بچاکر،اتحادووحدت برقرارکرنے میں بسرهوئی . 

اسلام معاشرے میں اتحاداورامن چاهتا ہے. یهی وجه ہے که بهت ساری اسلامی روایتیں اتحاد کےموضوع سےمتعلق هیں. پروردگار اپنی پیاری کتاب قران مجید میں فرماتا ہے "واعتصموا بحبل الله  جميعا ولا تفرقوا" (اور الله کی رسی کو مضبوطی سے تھامے رکھو اور تفرقہ میں نہ پڑو) اسی طرح ایک حدیث میں مرسل اعظم فرماتے هیں: «يدالله مع الجماعة ».خدا کےهاتھ همیشه جماعت کے ساتھ هیں.یعنی خدا کی نصرت همیشه اهل جماعت کے شامل ہے.اصلی هدف تک پهنچنے کےلئے جمع هونا خیر ہے اورتفرقه عذاب اورغضب الهی  کا موجب بنتا ہے « في الجماعة خير و في الفرقة عذاب» اسلام اتحاد کومعاشره کا ایک نهایت هی اهم رکن سمجتا ہے لهذا ایک روایت میں آیا ہے:« لا يحل لمسلم ان يهجر اخاه فوق ثلاثة ليال، يلتقيان فيعرض هذا و خيرهما الذي يبدء بالسلام».اس روایت کے مطابق دومسلمانوں کے درمیان تین دن سےزیاد قطع تعلق جائزنهیں ہے

بدقسمتی سے ملت تشیع پاکستان کی تنظیمیں ایک عرصہ سے پارہ پارہ ہیں اور ملت کا شیرازہ مختلف گروہوں کی صورت میں بکھر چکا ہے. ملت کے ہر مخلص فرد کی دیرینہ خواہش ہے کہ ملت کے مختلف دھڑوں کے درمیان وحدت  و یکجہتی قائم ہو . اس مقصد کے حصول کے لیے جب اکابرین ملت نے اس سال یوم القدس کا سالانہ جلوس مشترکہ طور پر برآمد کرنے کا فیصلہ کیا تو ملت کے ہر مخلص فرد کے دل کو راحت نصیب ہوئی اور وحدت و یکجہتی  کے حوالے سے امید کی ایک نئی کرن پیدا ہوئی. پاکستان کی مختلف شیعہ تنظیموں کے درمیان متعدد میٹنگز میں مشترکہ یوم القدس  جلوس کا عہد کیا گیا اور اس سلسلے میں تمام جزیات تک کو طے کر لیا گیا مگر بدقستمی سے چند مفاد پرست عناصر جن کے مفادات ملت کے درمیان نفاق سے وابستہ ہیں ، کی سازشوں نے اتحاد و وحدت کی اس کاوش کو ناکام بنا دیا ہے . اب خبر یہ ہے کہ مختلف شیعہ جماعتیں ایک ہی دن ، ایک ہی عنوان اور ایک ہی جگہ سے مختلف شہروں میں مشترکہ جلوس کے بجائے اپنی اپنی تنظیم کے جھنڈے تلے اس پروگرام کا انعقاد کریں گی جس سے نہ صرف پوری دینا میں شیعان پاکستان کے درمیان نفاق واضع ہو کر سامنے آئے گا بلکہ تنظیمی اور گروہی رکابتوں کی موجودگی میں کوئی ناخوشگوار واقعہ بھی رونما ہو سکتا ہے جو کہ موجودہ ملکی و بین الا قوامی صورت حال میں قطعا ملت کے مفاد میں نہیں.

اس قرار داد کے توسط سے ملت کا ہر مخلص فرد تمام اکابرین ملت خصوصا علامہ سید ساجد علی نقوی ، علامہ ناصرعبّاس جعفری اور علامہ سید جواد نقوی سے مطالبہ کرتا ہے کہ وہ اپنے جماعتی پلیٹ فارم کے بجائے نہ  صرف مشترکہ القدس ریلی کے انعقاد کو یقنی بنائیں بلکہ دیگر ملی امور پر بھی اشتراک عمل کی کوئی نہ کوئی صورت نکالیں اور مشترکہ طور پر ملت کے مفادات کے حصول کے لیے جدوجہد کر کے وحدت ملت کے خواب کو شرمندہ تعبیر فرمائیں. 

ملت کا ہر مخلص فرد شیعہ جماعتوں کے درمیان حائل خلیج اور اس کے نتیجے میں پائی جانے والی تقسیم در تقسیم کے عمل سے کمزور ہوتی سیاسی قوت پر شدید مضطرب و پریشان ہے اور اکابرین ملت سے مطالبہ کرتا ہے کہ وہ اپنی صفوں میں موجود  وحدت و یکجہتی کی دشمن کالی بھیڑوں کو فل الفور نکال باہر کریں جو  اپنے شخصی مفادات کے لیے ملت کو پارہ پارہ  رکھنا چاہتے ہیں.

اگر مخلصین کی اس آواز پر کان نہ دھرے گئے تو بعد از رمضان اتحاد کی راہ میں حائل افراد اور گروہوں کے خلاف سوشل میڈیا پر ایک باقاعدہ آگاہی مہم کا آغاز کیا جائے گا جس کے تحت ملت کے ہر خاص و عام کے سامنے مفاد پرست عناصر کو بے نقاب کرنے کا ایک باقاعدہ سلسلہ شروع کیا جائے گا.  

 



Today: یکجہتی فورم is counting on you

یکجہتی فورم پاکستان needs your help with “علامہ سید جواد نقوی : پاکستان میں مشترکہ جلوس یوم القدس کا انعقاد”. Join یکجہتی فورم and 103 supporters today.